View RSS Feed

BunnY

Is Shaam Wo Rukhsat Ka Samma Yaad Rahega .. اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا

Rate this Entry
Quote Originally Posted by BunnY View Post
اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا : ابن انشاء

اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا
وہ شہر، وہ کوچہ، وہ مکاں، یاد رہے گا

وہ ٹیس کہ ابھری تھی ادھر یاد رہے گی
وہ درد کہ اٹھا تھا یہاں یاد رہے گا

ہم شوق کے شعلے کی لپک بھول بھی جائیں
وہ شمع فسردہ کا دھواں یاد رہے گا

کچھ میر کے ابیات تھے کچھ فیض کے نسخے
اک درد کا تھا جن میں بیاں یاد رہے گا

جاں بخش سی اس برگ گل تر کی تراوت
وہ لمس عزیز دو جہاں یاد رہے گا
ہم بھول سکے ہیں نہ تجھے بھول سکیں گے
تو، یاد رہے گا، ہاں ہمیں یاد رہے گا

Submit "Is Shaam Wo Rukhsat Ka Samma Yaad Rahega .. اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا" to Digg Submit "Is Shaam Wo Rukhsat Ka Samma Yaad Rahega .. اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا" to del.icio.us Submit "Is Shaam Wo Rukhsat Ka Samma Yaad Rahega .. اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا" to StumbleUpon Submit "Is Shaam Wo Rukhsat Ka Samma Yaad Rahega .. اس شام وہ رخصت کا سماں یاد رہے گا" to Google

Tags: None Add / Edit Tags
Categories
Uncategorized

Comments