View RSS Feed

BunnY

Hum Basd Naz Dil O Jaa May Basaye Bhi Gaye .. ہم بصد ناز دل و جاں* میں بسائے بھی گئے

Rate this Entry
Quote Originally Posted by BunnY View Post
ہم بصد ناز دل و جاں میں بسائے بھی گئے : جون ایلیا

ہم بصد ناز دل و جاں میں بسائے بھی گئے
پھر گنوائے بھی گئے اور بھلائے بھی گئے

ہم ترا ناز تھے ، پھر تیری خوشی کی خاطر
کر کے بے چارہ ترے سامنے لائے بھی گئے

کج ادائی سے سزا کج کُلہی کی پائی
میرِ محفل تھے سو محفل سے اٹھائے بھی گئے

کیا گلہ خون جو اب تھوک رہے ہیںجاناں
ہم ترے رنگ کے پرتَو سے سجائے بھی گئے

ہم سے روٹھا بھی گیا یم کو منایا بھی گیا
پھر سبھی نقش تعلق کے مٹائے بھی گئے

جمع و تفریق تھے ہم مکتبِ جسم و جاں کی
کہ بڑھائے بھی گئے اور گھٹائے بھی گئے

جون! دل َ شہرِ حقیقت کو اجاڑا بھی گیا
اور پھر شہر توّہم کے بسائے بھی گئے

Submit "Hum Basd Naz Dil O Jaa May Basaye Bhi Gaye .. ہم بصد ناز دل و جاں* میں بسائے بھی گئے" to Digg Submit "Hum Basd Naz Dil O Jaa May Basaye Bhi Gaye .. ہم بصد ناز دل و جاں* میں بسائے بھی گئے" to del.icio.us Submit "Hum Basd Naz Dil O Jaa May Basaye Bhi Gaye .. ہم بصد ناز دل و جاں* میں بسائے بھی گئے" to StumbleUpon Submit "Hum Basd Naz Dil O Jaa May Basaye Bhi Gaye .. ہم بصد ناز دل و جاں* میں بسائے بھی گئے" to Google

Tags: None Add / Edit Tags
Categories
Uncategorized

Comments